Roman Urdu Poetry

ASHK – Sad Poetry of Love in Urdu

اشک
اشک پاگل سے چلے آتے ہیں
جو نہ کہنا ہو، وہ کہ جاتے ہیں
اشک پاگل سے چلے آتے ہیں

Advertisements

کچھ ضروری نہیں، دکھ ہو، سکھ میں
بیٹھ پلکوں پہ، یہ لہراتے ہیں
اشک پاگل سے چلے آتے ہیں

دل کی دنیا پہ، حکومت ان کی
جب ہی شاٴید، تو یہ اتراتے ہیں
اشک پاگل سے چلے آتے ہیں

میری پلکوں پہ لرزتے اکثر
کیا بگاڑے گا؟ یہ فرماتے ہیں
اشک پاگل سے چلے آتے ہیں

Advertisements

انکو پی لوں تو ، تباہی اظہر
اور نکلیں تو ، غضب ڈھاتے ہیں
اشک پاگل سے چلے آتے ہیں

ASHK
Ashk pagal say chalay atay hain
Jo na kehna ho, who keh jatay hain
Ashk pagal say chalay atay hain

Kuch zaroori nahin , dukh ho, such main
Baith palkon pay yeh leratay hain
Ashk pagal say Chalay atay hain

Dil ki duniya pay ,hukumet in ki
Jub hi shayed, to yeh itratay hain
Ashk pagal say chalay atay hain

Meri palkon pay laraztay akser
Kia bigaray ga?Yeh farmatay hain
Ashk pagal say chalay atay hain

Inko pee lun to tabahi azhar
Aur niklain to Gazeb dhatay hain
Ashk pagal say chalay atay hain


Leave a Comment